Tuesday, June 30, 2020

Orya Maqbool Jan ||De Mujhe Izn e Maseehai De|| harferaz||Episode 11

Orya Maqbool Jan ||De Mujhe Izn e Maseehai De|| harferaz||Episode 11

Orya Maqbool Jan

#tariqaziz, #oryamaqbooljan میرے والد کہتے اس کے پاس تو ہنرہے، وہ چاق پر جا بیٹھے گا، لیکن تم کیا کرو گے۔ لیکن نویں جماعت کے بعد اس نے پڑھائی چھوڑدی اور دنیا گھومنے چل نکلا، مدتوں لاہور کی ہیرا منڈی میں بسیرا کیا، عورت جنس اور جذبات کے سارے روپ اس پر کھلے، اسی ماحول میں مولانا مودودی کی "پردہ" اس کے ہاتھ آئی، کایاکلپ ہو گئی، واپس گجرات آگیا۔ میرا الحاد اور مارکسزم کا سفر بھی مولانا مودودی کی تنقیحات کے دروازے پر دم توڑ چکا تھا۔ چند ماہ اکٹھے گذرے، میں پنجاب یونیورسٹی چلاآیا اور وہ کائنات کے سربستہ رازوں کو ڈھونڈنے بنارس کے پنڈتوں سے ستارہ شناسی سیکھنے چل نکلا۔ فوارہ چوک اور اس کی گلیاں بس اب یادوں میں بسی رہ گئیں۔ زندگی کے جھمیلوں میں ایسا الجھاکہ بارہ سال، تعلیم، یونیورسٹی میں پڑھانااور سول سروس اوڑھنا بچھونا بنے رہے۔ لیکن رات کو سرہانے پڑی نوٹ بک پر شاعری مسلسل ہوتی رہتی، Our main focus is to provide the best articles, columns, literature, and news in a very good and clear audio-video format. You can get all technical and non-technical information from this channel ( #urdureadings) https://bit.ly/3d27mwq 

No comments: